حضور ﷺ کا بتایا ہوا وظیفہ روزانہ رات کو یہ والی سورۃ ایک بار پڑ ھ لیا کرو

آپﷺ نے ایک غریب سے لیکر بادشاہ تک ہر شخص کی زندگی گزارنے کے طریقے بتائے کوئی آدمی جاتا کہ ہمارے گھر کے اندر رزق کی تنگی کاروبار نہیں ہے پریشان ہیں تو آپﷺ نے بہت سے طریقے بتائے ہیں۔سورۃ واقعہ قرآن مجید چھپنویں سورت ہے جس کا شمار مکی سورتوں میں ہوتا ہے ۔ واقعہ قیامت کے ناموں میں سے ایک نام ہے ۔

سورۃ واقعہ میں قیامت کے دن اور اس کے واقعات کے بارے میں تذکرہ ہوا ہے ۔ قیامت میں دن میں لوگوں کو تین گروہوں اصحاب یمین ،اصحاب شمان اور صابقون میں تقسیم کیا گیا ہے ۔ ان کے مقام کے بارے میں بھی تذکرہ کیا گیا ہے ۔سورۃ واقعہ میں قیامت کے دن لوگوں کا دوبار ہ زندہ ہونا بیان ہوا ہے ۔

سورۃ واقعہ کی تلاوت کے بارے میں اسلامی کتابوں میں بہت سی روایات موجود ہیں ان حدیثوں میں سے ایک حدیث رسول اللہ ﷺ سے منقول ہے جو شخص سورۃ واقعہ کی تلاوت کرے گا اس کے بارے میں لکھا جائے گا کہ یہ غافلین میں سے نہیں ہے ۔

اس سورۃ آیتیں اس قدر دل دہلا دینی والی اور چونکا دینے والی ہیں اس کے پڑھنے کے بعد غفلت کی گنجائش نہیں رہتی ۔حضرت ابن عباس ؓ بیان کرتے ہیں کہ حضرت ابو بکر صدیق ؓ نے عرض کیا کہ یا رسول ﷺ آپ بوڑھے ہوگئے ہیں تو نبی کریمﷺ نے فرمایا مجھے سورۃ ہود ،سورۃ واقعہ نے بوڑھا کردیا ۔ حضرت عبداللہ بن مسعود ؓ جب بیان ہوئے

جس بیماری میں آپ کی وفات ہوئی اس بیماری میں حضرت عثمان بن عفان ؓ نے آپکی عیادت کی اور فرمایا آپکو کیا شکایت ہے حضرت عبداللہ بن مسعود ؓ نے فرمایا اپنے گناہوں کی شکایت ہے ۔ حضرت عثمان بن عفان ؓ نے عرض کیا کہ آپ کی خواہش ہے حضرت عبداللہ بن مسعود ؓ نے فرمایا اپنے رب کی رحمت حضرت عثمان بن عفان ؓ نے عرض کیا کہ آپ کیلئے کسی طبیب ڈاکٹر یا حکیم کو بلاؤں۔

آپ نے فرمایا کہ طبیب نے تو مجھے بیمار کردیا ہے ۔حضرت عثمان بن عفان ؓ نے عرض کیا کچھ مال وغیرہ آپ کو دے دوں حضرت عبداللہ بن مسعود ؓ نے فرمایا کہ مال وغیرہ کی مجھے کوئی ضرور ت نہیں ہے ۔حضرت عبداللہ بن مسعود ؓ نے فرمایا آپ کو میری بیٹیوں کے بارے میں فقر ومحتاجی کا ڈر ہے میں نے اپنی بیٹیوں کو حکم دیا ہے

کہ وہ ہر رات سورۃ واقعہ کو پڑھا کریں۔آپﷺ نے فرمایا جو شخص ہر رات سورۃ واقعہ پڑھے اسے کبھی بھی فقر وفاقہ نہیں پڑے گا۔ہم بات کررہے تھے سورۃ واقعہ کی فضیلت کی یہ فضیلت رات کے کسی بھی حصہ میں پڑھنے سے حاصل ہوسکتی خاص مغرب کے بعد پڑھنا ضروری نہیں۔ آپ گھر کے اندر تمام افراد مل کر جو قرآن پاک پڑھا ہوا ہے

سورۃ واقعہ رات کو پڑھ لیا کرے مغرب کے بعد پڑھ سکتے عشاء کے بعد پڑھ سکتے ہیں رات کو سونے سے پہلے کسی بھی وقت پڑھ سکتے ہیں آپ یہ معمول بنا لیں گے تو انشاء اللہ آپ کے گھر اندر رزق کی تنگی کبھی بھی نہیں ہوگی ۔ ایک تو قرآن پاک پڑھنے کا ثواب مستقل ہے ہی دس گناہ معاف ہوتے ہیں دس درجات بلند ہوتے ہیں اور نامہ اعمال میں دس نیکیاں لکھ دی جاتی ہیں اللہ تعالیٰ دنیا کی پریشانی کو دور کردیتے ہیں۔

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں