پیارے نبیﷺ نے حضرت علی کو 7دن کا وظیفہ بتایا 7دن میں تمام پریشانی مصیبت ختم 90ہزارحاجتیں پوری

اللہ کی ذات ہمیشہ سے ہے اور ہمیشہ رہے گی وہی آخر الآخرین ہے ۔انسان کیلئے اللہ تعالیٰ نے اپنے لیے پیدا فرمایا تاکہ یہ انسان اللہ کی بندگی کرے ۔ کہا جاتا ہے کہ اللہ کے محبوب اور ہمارے پیارے آقاﷺ وجہ کائنات ہیں حدیث قدسی کا مفہوم ہے کہ اگر میں نے اپنے محبوب محمد مصطفی احمد مجتبیٰ ﷺ کو پیدا نہ کرنا ہوتا تو میں اس کائنات کو نہ سجاتا آج جو وظیفہ آپ کو بتانے جارہے ہیں ۔

ہمارے آقاﷺ نے حضرت علی ؓ کو تعلیم فرمایا یہ وظیفہ اللہ کے پیارے سے ناموں اور مختصر دعا پر مشتمل ہے بہت ہی پیارا وظیفہ ہے جس سے آپکی زندگی کی ہر قسم کی پریشانیاں انشاء اللہ اس پیارے وظیفے سے دور ہوجائیں گی ۔

اس وظیفے کو یقین کیساتھ کریں اس وظیفہ کو آپ نے کیسے کرنا ہے اور وہ پیارے کلمات کیا ہیں۔قرآن پاک میں اللہ رب العزت اپنے بندوں کو خود فرماتا ہے مجھے میرے پیارے ناموں سے پکارو او ر اللہ نے اپنے نبیﷺ کے ذریعے ہمیں اپنے جو نام سکھائے ہیں اور جو صفاتی نام ہم تک پہنچے ہیں

ان کی تعداد ننانوے ہے ان کے علاوہ اللہ کی بے پنا ہ صفات ہیں جنہیں اللہ نے مخفی رکھا ہوا ہے ۔ جیسا کہ حدیث پاک ﷺ کا مفہوم ہے اگر کائنات میں موجود تمام سمندر سیاہی بن جائیں اور کائنات کے سات درختوں سے قلمیں بنا دی جائیں آدم ؑ سے لیکر قیامت تک کے انسان لکھنے والے بن جائیں اور وہ اللہ کی صفات کو لکھنا شروع کریں تو سیاہی ختم ہوجائیگی قلمیں ختم ہوجائینگی اللہ کی صفات اور بڑائی ختم نہیں ہوگی

۔ ایسی شان والے اللہ کو جب اس کابند ہ پکارتا ہے اللہ اپنے بندے کی جانب فوراً متوجہ ہوتا ہے کیونکہ اللہ کی ذات کو اپنے بندوں سے بے حد پیار ہے اللہ کے پیارے نبی ﷺ نے بھی کئی احادیث کے اندر اس بات کا ذکر فرمایا ہے اپنے رب سے اسماء حسنہ کے وسیلہ سے دعا مانگو دعا قبول ہوتی ہے آج کی جو دعا بتانے جارہے ہیں

وہ آپﷺ نے حضرت علی ؓ کو سکھائی ہے آپﷺ نے حضرت فاطمہ ؓ کو بھی سکھائی ہے انہوں نے حضرت علی ؓ کو سکھائی ۔یہ دعا بھی اللہ کے اسمائے حسنہ اور دعا پر مشتمل ہے ۔اس حدیث کی طرف چلتے ہیں کہ سیدنا انس بن مالک ؓ سے روایت ہے کہ رسول اللہﷺ نے سیدہ فاطمہ ؓ سے فرمایا میں تمہیں جو وصیت کرتا ہوں اس عمل کو اپنا معمول بنا لو

کوئی چیز اس میں مانع نہ بنے تو تم صبح شام یا حی یا قیوم،برخمتک استغیثُ ترجمہ اے ہمیشہ ہمیشہ زندہ رہنے والے زمین وآسمان اور تمام مخلوق کو قائم رکھنے والے تیری رحمت کی دہائی ہے تو میرے کام درست فرما دے ۔ یہ ہیں وہ کلمات جو ہمارا آج کا وظیفہ ہے

جو ہم آپکو بتانے جارہے ہیں یاد رہے کہ یہ وظیفہ خود آقا دوجہاں ﷺ کا بتایا ہوا وظیفہ ہے ۔ اس وظیفہ کو معمول بنا لیں گے تو اللہ کے فضل وکرم سے آپ کے تمام کام بن جائیں گے جو کام رکے ہوئے ہیں چل پڑیں گے ۔حاجتیں پوری ہونگی۔

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں