پیشاب کی تمام بیماریوں کا آسان ترین علاج

السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ۔اس تحریر میں مثانے کے تمام مسائل کے بارے میں علاج پیش کیا جائے گا۔یہ مسئلہ نوجوانوں کا بھی ہے بوڑھوں کا بھی ہے اور ہر اس بندے کا ہے جس کے جسم کے اندر مثانہ ہے اور یہ مثانہ کئی وجوہات سے خراب ہوتا ہے اور اس کی وجوہات زندگی کی ساتھ چلتی رہتی ہیں اور آخر ہم بتا بھی نہیں پاتے کہ ہمارا مثانہ خراب ہوگیا ہے ہمیں یورین کا مسئلہ ہوگیا ہے ہمارے وہاں جو تھیلی ہے اس میں سوزش تیسری گولی کا نمودار ہونا ہوگیا ہے یا ہمارا یورین رک رک کر آرہا ہے ہمیں گرمی بہت زیادہ ہوگئی ہے ہمارا یورین وہ بہت پیلا آرہا ہے ہمیں گھبراہٹ بہت زیادہ ہوتی ہے اور ہم خوابوں کا بہت زیادہ شکار ہوجاتے ہیں

اور ہم پیشاب کے قطروں کا اور اس میں سفید قطروں کا مادے کا گاڑھے آنے کا شکار ہوگئے ہیں ۔ہم بڑے ہی اچھے انداز میں آپ کو بتائیں گے کہ یہ کہاں سے شروع ہوتا ہے اور اس میں سب سے پہلا جو سبب ہے جس کو ماہرین نے عالمی سطح پر بیان کیا ہے وہ ہے پانی کی کمی کا نظام جو نوجوان پانی کی کمی کا شکار ہوتے ہیں تووہ مثانے کی کمزوروی و گرمی کا بھی شکار ہوجاتے ہیں اور پانی کی کمی کن وجوہات سے ہوتی ہے ؟ جو لوگ صبح کی سیر کرتے ہیں پانی پھل سبزی جوسز کا ناشتہ کرتے ہیں اور جو لوگ پانی پھل سبزی جوسز دن میں استعمال کرتے ہیں جو لوگ رات کا کھانا ہضم کرکے سوتے ہیں جو لوگ رات کو جلدی سوتے ہیں اور کچھ بھی کھائے بغیر سوائے فروٹ کے سوتے ہیں

وہ لوگ مثانے کی بیماریوں کا شکارنہیں ہوتے اور جو لوگ یہ سارے عمل کرتے ہیں ان لکوریا بھی ہوتا ہے ان کو احتلام بھی ہوتا ہے ان کو پیشاب کے قطرے بھی آتے ہیں ان کو رین پیلا بھی آتا ہے پیشاب رک کے بھی آتا ہے مثانہ میں سوزش بھی ہوجاتی ہے اور جو لوگ خصوصی شارٹ یورین کو روک لیتے ہیں اور ابھی کرتے ہیں ابھی نکالتے ہیں تو وہ لوگ بھی اپنے تیزاب سے اپنے مثانے کو ورم د ے دیتے ہیں جس سے ہمارے مسائل شروع ہوجاتے ہیں اور مثانے کی کمزوری کی وجہ سے اکثر نوجوان شادی کی طرف جانے کی کوشش نہیں کرتے بلکہ بغاوت کرتے ہیں کہ ہم نے شادی نہیں کرنی میں وہاں کیاکروں گا مجھے تو خواب اتنے آتے ہیں مجھے تو قطرے اتنے آتے ہیں

اور خصوصی طور پر جو بچے بچیاں خصوصی طور پر موویز گرم دیکھتے ہیں اور گرم چیزیں کھاتے ہیں تلی ہوئی چیزیں کھاتے ہیں سپائسی اشیاء کھاتے ہیں لیٹ سوتے ہیں موبائل کا استعمال کرتے ہیں اور ایسے خیالات کا اظہار کرتے ہیں وہ بھی مثانے کی گرمی و کمزوری کا شکارہوجاتے ہیں ۔مثانے کی گرمی و کمزوری کو کیسے ٹھیک کیاجاتا ہے؟ سب سے پہلے پانی پورا رکھنا ہے اس کے بعد جو لوگ پانی پھل سبزی جوسز اور دودھ کا استعمال کرتے ہیں وہ لوگ ان چیزوں کا شکار نہیں ہوتے رات کا کھانا اور سونے کا وقت صحیح رکھتے ہیں وہ بھی درست رہتے ہیں ۔چھلکا اسپغول لے لیں اور آدھا کلو دودھ لیجئے اور دو عدد سیب لیجئے ناشتے میں تو آپ کے مثانے کی گرمی ٹھیک ہوجائے گی اسی طرح جو لوگ مثانے کی بہت گرمی کا شکار ہیں وہ دودھ آدھا کلو ٹھنڈا لیں گے برف والا نہ ہو اس میں گوند کتیرا ایک چمچ شامل کریں اور ایک چمچ چھلکا اسپغول ڈال کر پی لیجئے خالی پیٹ تین ٹائم یعنی صبح دوپہر شام انشاء اللہ بہت فائدہ ہوگا۔

کیٹاگری میں : health

اپنا تبصرہ بھیجیں