یا رسول اللہﷺ ہم صرف آپﷺ کے حکم کے پابند ہیں۔

سابق ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور کچھ عرصہ قبل عمرہ کی ادائیگی کی غرض سے سعودی عرب گئے تھے جہاں پر پاکستانی نے انہیں گھیر لیا اور انکے ساتھ تصاویر بنا کر سوشل میڈیا پر اپ لوڈ کر دیں، پاکستانیوں نے اپنے ہیرو کے ساتھ والہانہ محبت کا اظہار کیا، حرم شریف کی حدود ہوں یا روضہ رسول ﷺ ، ہر جگہ پاکستانی انکے گرد جمع ہی رہے اور انکے ساتھ ےتصاویر بناتے رہے۔ روزنامہ اوصاف کے مطابق آصف غفور کی ایک تصور منظر عام پر آئی جس میں وہ روضہ رسول ﷺ کے سامنے جھالیوں کے سامنے سیلوٹ پیش کرتے دکھائی دیئے، عموماً یہ دیکھا جاتا ہے کہ مسلمان روضہ رسول ﷺ کے سامنے عبادتیں کرتے اور درود و سلام پڑتے دکھائی دیتے ہیں۔

لیکن اس موقع پر میجر جنرل آصف غفور نے ایک منفرد انداز اپنایا اور اپنے پیارے آقا حضرت محمد ﷺ کے روضہ کے سامنے سیلوٹ مارا، میجر جنرل آصف غفور نے خالصتاً فوجی انداز میں آقا دو جہان ﷺ کی خدمت میں سلام پیش کیا، سیلوٹ کا مطلب یہی ہے کہ جب کوئی فوجی اپنے سینئر کے سامنے پیش ہوتا ہے تو اسکے حکم کا پابند ہوتا ہے اور اپنے ہاتھ کو اپنے ماتھے تک لیجا کر سیلوٹ پیش کرتا ہے۔

دوسری جانب میجر جنرل آصف غفور کے سیلوٹ کی تصویر سوشل میڈیا پر وائرل ہونے کے بعد صارفین کا کہنا ہے کہ اس سیلوٹ کا مطلب یہی ہے کہ میجر جنرل آصف غفور نے ثابت کر دیا کہ وہ حضرت محمدﷺ کے حکم کے ماتحت ہیں کیونکہ آقا دو جہان تاریخ کے پہلے اور کامیاب ترین سپہ سالار ہیں کیونکہ آپکی سپہ سالرای میں لڑی گئی ہر جنگ میں مسلمانوں کو اللہ تعالیٰ نے فتح یاب کیا اور اگر غزوہ احد میں شکست ہوئی بھی تو اللہ نے قرآن حکیم میں واضح الفاظ میں فرما دیا ” یہ محض تمہیں سبق سکھانے کے لیے تھا”۔

اپنا تبصرہ بھیجیں